باحمدامین

احمدامین مصری اپنی کتاب ضحی ال اسلام کی تبسری جلد میں اپنی بے عقلی اوراہلببت علیہم السلام کی دشمنی میں لکھتاہے کہ شیعوں میںمھدویت کی فکریہودیوںوعیسائیوں سے آئی ہے اوراس کی کوئی حقیقت نہیں ہے۔

احمدامین ابن تیمیہ اورانھیں جیسے دوسرے لوگوں کویہ جواب دیاجاسکتا ہے کہ شیعہ اوران کے سچے عقیدوں کی جڑیں بہت گہری ہیں ان کی ابتدا پیغمبراسلام کے زمانے میں ہوئی اوروہ اللہ کی وحی کی بنیادپر ہے امام مہدی کے وجود اوران کے قیام کاعقیدہ قرآن کریم کی آیات وپیغمبراسلام کی روایتوں کی بناء پرہے۔

انسان کواپنے مستقبل کے اچھے ہونے کی امیداوردنیامیںعدالت پھیلانے کے لئے ایک مصلح کے آنے کاانتظارایک فطری چیزہے جس کا سبھی آسمانی کتابوں جیسے توریت ،زبور،انجیل میں ذکرہواہے لہذا مھدویت کاعقیدہ صرف شیعوں سے مخصوص نہیں ہے بلکہ سبھی مسلمانوں کا عقیدہ ہے۔